آٹھ شوال،وہابی غیر منطقی تفکر کے ہاتھوں حرمِ بقیع کے انہدام پہ تعزیت پیش کرتے ہیں

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
آٹھ شوال،وہابی غیر منطقی تفکر کے ہاتھوں حرمِ بقیع کے انہدام پہ تعزیت پیش کرتے ہیں
8 شوال۔1344ہجری قمری کو تاریخ اسلام کا ایک اہم قبرستان،بقیع،وہابیوں کے ہاتھوں شہید کردیا گیا۔
بقیع صرف ایک قبرستان نہیں بلکہ تمام مورخین اور تاریخ سے محبت کرنے والے افراد کیلئے ایک خزانے کی حیثیت رکھتا ہے۔چار آئمہ معصومین علیہم السلام کے علاوہ پیغمبر خدا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی کچھ ازواج،فرزند،اصحاب،تابعین اور خاندان کے افراد نیز تقریبا دس ہزار مشہور اسلامی و تاریخی شخصیات کی قبور یہاں واقع ہیں۔
عدالت طلب مکتبِ تشیع،کئ صدیوں مخصوصا گذشتہ دہائیوں سے کج فکر اور بد خواہ افراد کے حملوں کی زد پہ ہے جو اپنے جہل اور نادانی کی وجہ سے اس فرقہ ناجیہ سے برسرِپیکار اور اس کی نابودی اور تباہی کے درپے ہیں۔
آٹھ شوال کو بے عقل اور نادان وہابیت کے دستِ ظلم وستم سے آئمہ ھدیٰ علیہم السلام کے ملکوتی اور انتہائ با عظمت مزارات کو زمین سے ملا دیا گیا اور کروڑوں آزادی طلب اور عدالت کے خواہاں محبان اہلبیت علیہم السلام کے دلوں کو داغدار کردیا گیا۔
وہابیت جو اس وقت جدید طریقے سے یمن،شام اور عراق میں بسنے والے مسیحی،آشوری اور یزدی مذاہب سے تعلق رکھنے والے حریت پسندوں کی روح اور جان کی دشمن ہے اور اسی وجہ سے روزانہ ہزاروں کی تعداد میں انہیں تہ تیغ کیا جارہا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.